ملک بھر کے تاجر رضا کارانہ ٹیکس اسکیم کو مسترد کر چکے ،خالد پرویز

ود ہولڈنگ ٹیکس واپس نہ لیا گیا تو شٹر ڈاؤن سمیت سول نافرمانی کا آپشن بھی موجود ہے حکومت ہوش کے ناخن لے ورنہ دما دم مست قلندر ہوگا،آل پاکستان انجمن تاجران

نواب شاہ(نمائندہ )آل پاکستان انجمن تاجران کے صدر خالد پرویز نے کہا ہے کہ ملک بھر کے تاجر رضا کارانہ ٹیکس اسکیم کو مسترد کر چکے ہیں، رضا کارانہ ٹیکس اسکیم کے مثبت نتائج سامنے نہیں آئے ، حکومت فوری طور ود ہولڈنگ ٹیکس واپس لے اگر تاجر برادری کا مطالبہ تسلیم نہ کیا گیا تو ملک بھر کے تاجر شٹر ڈاؤن ہڑتال کرینگے اور سول نافرمانی کا آپشن بھی موجود ہے ،حکومت تاجر برادری کا پیسہ بیدردی سے اسکیم کی تشہیر پر خرچ کر رہی ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے شہری تاجر اتحاد نواب شاہ کی جانب سے دیے گئے ظہرانے اورحیدرآباد کی تاجر تنظیموں کے اراکین سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے تاجر برادری میں دھڑے بندی کا فائدہ حاصل کرنے کی کوشش کی ہے مگر ہم حکومت پر وا ضح کرتے ہیں کہ حکومت کو یہ فائدہ اٹھانے نہیں دینگے اور جلد تاجروں کی دھڑا بندی ختم کرا دینگے ، اس سلسلے میں ہماری کوششیں جاری ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ حکومت 15مارچ سے ود ہولڈنگ ٹیکس 0.6فیصد کرنے جا رہی ہے جو کہ ہم کسی صورت نہیں ہونے دینگے اور تاجر برادری سے رابطہ کرنے کے بعد ہم اپنے لائحہ عمل کا اعلان کرینگے، شٹر ڈاؤن سمیت سول نافرمانی کا آپشن بھی موجود ہے ، اگر حکومت نے ہوش کے ناخن نہیں لیے تو پھر دما دم مست قلندر ہوگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں