شرمین، ملک کے روشن پہلو پر بھی فیچر فلم بنائیں:مصطفی قریشی

سینئراداکارمصطفی قریشی نے کہا کہ شرمین عبیدچنائے کاآسکرایوارڈحاصل کرنابلاشبہ اعزازکی بات ہے لیکن ہم حیران ہیں کہ اس سے قبل بھی انہوں نے دستاویزی فلم پر آسکر ایوارڈحاصل کیااوراب بھی دستاویزی فلم پر انہیں ایوارڈسے نوازاگیا

لاہور(کلچرل رپورٹر)سینئراداکارمصطفی قریشی نے کہا کہ شرمین عبیدچنائے کاآسکرایوارڈحاصل کرنابلاشبہ اعزازکی بات ہے لیکن ہم حیران ہیں کہ اس سے قبل بھی انہوں نے دستاویزی فلم پر آسکر ایوارڈحاصل کیااوراب بھی دستاویزی فلم پر انہیں ایوارڈسے نوازاگیاجن میں پاکستان کے سیاہ پہلوکواجاگرکیاگیا۔روزنامہ دنیاسے گفتگوکرتے ہوئے انکاکہناتھاکہ پاکستان کے عوام میں غیرت کے نام پرقتل صرف چندلوگ ہی کرتے ہیں تاہم ایسے واقعات صرف پاکستان میں ہی نہیں ہوتے لہٰذا ایسی فلموں سے ملک کی بدنامی ہوتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ میں شرمین عبیدچنائے کومشورہ دیتاہوں کہ دستاویزی فلم توایک چھوٹی سی فلم ہوتی ہے ۔وہ ملک کے روشن پہلوئوں کومدنظررکھتے ہوئے اس کے بجائے فیچرفلم بنائیں تاکہ پوری دنیاکوپتہ چلے کہ پاکستانی قوم دہشت گردنہیں بلکہ پرامن اورمحبت کرنے والی ہے ۔انکاکہناتھاکہ شرمین باصلاحیت ہیں، مجھے یقین ہے کہ وہ فیچرفلم بناکربھی ایوارڈحاصل کرسکتی ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.