ٹی ٹوئنٹی فارمیٹ میں ریلیکس ہونے کی گنجائش نہیں،شاہد آفریدی

کچھ غلطیاں سرزد ہوئیں جن کے بڑی ٹیموں کیخلاف قطعی متحمل نہیں ہو سکتے ،کپتان

میرپور(اسپورٹس ڈیسک)ایشیاء کپ میں متحدہ عرب امارات کیخلاف کامیابی کے بعد قومی ٹی ٹوئنٹی کپتان شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ بیس اوورز کی کرکٹ میں ریلیکس ہونے کی کوئی گنجائش نہیں،اس میچ میں بھی ان سے کچھ غلطیاں سرزد ہوئیں جن کے بڑی ٹیموں کیخلاف متحمل نہیں ہو سکتے ۔ ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے اپنے بیٹسمینوں کو رنز کے پیچھے بھاگنے کے بجائے نارمل کرکٹ کھیلنے کی ہدایت کی تھی اور ابتدائی وکٹیں گرنے کے بعد حالات بہتر ہو گئے ۔ آفریدی کا کہنا تھا کہ یو اے ای کی ابتدائی تین وکٹیں جلد گرانے کے بعد انہیں امید تھی کہ حریف ٹیم کو 90 یا 100 رنز پر آؤٹ کر لیں گے لیکن انہوں نے بہتر بیٹنگ بھی کی جبکہ کچھ شاٹس بیٹ کے کونے چھو کر باؤنڈری تک چلے گئے ۔ یو اے ای کے کپتان امجد جاوید کا کہنا تھا کہ انہوں نے 120 رنز کی توقع کی تھی لیکن انہیں اضافی دس رنز مل گئے تو خیال تھا کہ اس ہدف کا تعاقب آسان نہیں ہوگا لیکن افسوس کہ ابتائی کچھ وکٹیں گرانے کے باوجود اس کا فائدہ نہیں اٹھایا جا سکا اور شعیب ملک نے عمر اکمل کے ساتھ مل کر کھیل کو قابو کر لیا لیکن یو اے ای کی ٹیم ابھی سیکھنے کے مرحلے سے گزر رہی ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ امارات کی ٹیم اچھے کھیل کا مظاہرہ کر رہی ہے اور انہوں نے بھی اپنی ذاتی کارکردگی کی بدولت میچ میں واپس آنے کی کوشش کی جس کے بعد پاکستانی ٹیم کو کامیابی کیلئے سخت محنت کرنا پڑی لیکن میچ کو مزید دلچسپ نہ بنایا جا سکا۔ انہوں نے انکشاف کیا کہ کوچ عاقب جاوید نے ان سے کہا تھا کہ اگر 100 رنز بنالئے تو فائٹ دی جا سکتی ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.