ایشیاء کپ: سری لنکا کی اور شکست, بھارتی ٹیم فائنل کی نشست پکی کر لی

ھونی الیون نے 139رنز کا ہدف پانچ وکٹوں پر حاصل کرلیا،مرد میدان ویرات کوہلی کی ناقابل شکست نصف سنچری،یوراج سنگھ کے برق رفتار 35اور سریش رائنا کے 25بھی نمایاں،نووان کولاسیکرا کی دو وکٹیں

سری لنکن سائیڈ پہلی بیٹنگ میں نو وکٹیں کھو کر 138تک رسائی میں کامیاب رہی،چمارا کاپوگیڈرا 30اور ملندا سری وردنے ہی 22 بنا سکے ،جسپریت بمراہ،ہردیک پانڈیا اور روی چندرن ایشوین کے دو،دو شکار میرپور(اسپورٹس ڈیسک)ایشیاء کپ ٹی ٹوئنٹی کرکٹ ٹورنامنٹ میں سری لنکا کی ایک اور ناکامی کے نتیجے میں بھارتی ٹیم نے فائنل کی نشست پکی کر لی،دھونی الیون نے 139رنز کا ہدف پانچ وکٹوں پر حاصل کر لیا،مرد میدان ویرات کوہلی کی ناقابل شکست نصف سنچری کے علاوہ یوراج سنگھ کے برق رفتار 35اور سریش رائنا کے 25رنز بھی نمایاں رہے ،نووان کولاسیکرا کی دو وکٹیں کسی کام نہ آ سکیں،سری لنکن سائیڈ پہلی بیٹنگ میں نو وکٹیں کھو کر 138تک رسائی میں کامیاب رہی،چمارا کاپوگیڈرا 30اور ملندا سری وردنے ہی 22 رنزبنا سکے، جسپریت بمراہ، ہردیک پانڈیا اور روی چندرن ایشوین کے دو،دو شکاروں نے کام کر دکھایا ۔شیر بنگلہ نیشنل کرکٹ اسٹیڈیم پر ایونٹ کے ساتویں معرکے میں بھارتی کپتان مہندر سنگھ دھونی نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کو ترجیح دی تو ان کا یہ فیصلہ اس وقت درست ثابت ہوا جب سری لنکا کے 31 کے مجموعی اسکور پر تین ابتدائی کھلاڑی پویلین واپس لوٹ گئے ۔ تیسرے اوور کی دوسری گیند پر سری لنکا کو پہلا نقصان دنیش چندی مل کی شکل میں برداشت کرنا پڑا جن کو چار کے انفرادی اسکور پر اشیش نہرا نے پویلین روانہ کیا۔ پندرہ کے اسکور پر شیہان جے سوریا بھی محض تین رنز بناکر جسپریت بمراہ کا شکار بن گئے لیکن تجربہ کار تلکرتنے دلشان کے اخراج نے سری لنکن کیمپ میں مایوسی کی لہر دوڑا دی جو دو چوکوں کی مدد سے اٹھارہ رنز بناکر ہردیک پانڈیا کی گیند پر روی چندرن ایشوین کو کیچ تھما بیٹھے ۔ کپتان اینجلو میتھیوز بھی ٹیم کی ڈولتی کشتی کو سہارا نہ دے سکے جنہیں اٹھارہ کے انفرادی اسکور پر ہردیک پانڈے نے تین چوکوں سمیت چلتا کیا۔ سری لنکن مداح اپنی ٹیم کے 100 رنز کی تکمیل کا جشن ابھی پوری طرح منا بھی نہ پائے تھے کہ اننگز کو سنبھالنے والے چمارا کاپوگیڈرا اور ملندا سری وردنے کی شراکت کا بھی خاتمہ ہوگیا۔ روی چندرن ایشوین کے ہاتھوں آؤٹ ہونے سے قبل ملندا سری وردنے نے ایک چھکے اور ایک چوکے کی مدد سے 17 گیندوں پر 22 رنز بنالئے تھے ۔ محض چار رنز کے اضافے پر ایک رن بنانے والے داسون شناکا بھی ٹیم کو داغ مفارقت دے گئے ۔ اٹھارہویں اوور میں چمارا کاپوگیڈرا کی ہمت بھی جواب دے گئی جو تین چوکوں کی مدد سے 30 رنز بناکر ٹاپ اسکورر رہے ۔ بعد ازاں تھیسارا پریرا اور نووان کولاسیکرا بھی باترتیب 17 اور 13 جارحانہ رنز بناکر رخصت ہوئے تو سری لنکن ٹیم نو وکٹوں پر 138 رنز بنا سکی تھی۔ بھارت کی جانب سے ہردیک پانڈیا، جسپریت بمراہ اور روی چندرن ایشوین نے دو، دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ جواب میں بھارتی ٹیم شیکھر دھون کے ایک اور روہیت شرما کے پندرہ رنز کے بعد مشکل میں تھی تو ویرات کوہلی نے دو چوکوں سمیت 25 رنز بنانے والے سریش رائنا کے ساتھ 54 رنز جوڑ کر صورت حال بہتر بنائی جبکہ یوراج سنگھ کی دھواں دھار اننگز نے ساری مشکل ہی آسان کر ڈالی جب انہوں نے تین چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے اٹھارہ بالز پر 35 رنز بناکر فتح کے راستے آسان کر دیئے ۔ اگرچہ ہردیک پانڈیا دو رنز بنا کر چلتے بنے لیکن ویرات کوہلی کی ناقابل شکست نصف سنچری کی بدولت مطلوبہ ہدف آخری اوور کی دوسری گیند پر پانچ وکٹیں گنوا کر حاصل کرلیا گیا۔ مرد میدان ویرات کوہلی کے فتح گر 56 رنز سات چوکوں سے سجے تھے جبکہ کپتان دھونی سات رنز کے ساتھ سرخرو لوٹے ۔ سری لنکا کی جانب سے نووان کولاسیکرا نے دو کھلاڑی برخاست کئے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.